اسلام آباد(بی بی سی ) سپریم کورٹ عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد کی اہلیت یا نااہلیت کے بارے میں فیصلہ کل سنائے گی۔مسلم لیگ نون کے رہنما شکیل اعوان نے شیخ رشید کی اہلیت چیلنج کی تھی اور ان پر آمدن سے زائد اثاثے بنانے کا الزام عائد کیا تھا، جسٹس شیخ عظمت سعید کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے فریقین کا موقف سننے کے بعد 20 مارچ کو فیصلہ محفوظ کیا تھا۔ مسلم لیگ نون کے رہنما شکیل اعوان نے درخواست دائر کی تھی کہ شیخ رشید احمد نے 2013 کے انتخابات کے لیے کاغذات نامزدگی میں غلط بیانی کی ہے، درخواست گزار نے یہ الزام عائد کیا تھا کہ شیخ رشید نے کاغذات نامزدگی میں اپنے گھر کی قیمت ایک کروڑ دو لاکھ روپے ظاہر کی ہے جبکہ جس علاقے میں گھر ہے وہاں مکانات کی بکنگ چار کروڑ 80 لاکھ روپے سے شروع ہوئی تھی۔ اسی طرح شکیل اعوان کا کہنا تھا کہ فتح جنگ کے موضع رامہ میں ریکارڈ کے مطابق شیخ رشید کی زمین ایک ہزار 81 کنال ہے لیکن انہوں نے کاغذات نامزدگی میں 968 کنال 13 مرلہ ظاہر کی ہے۔

This Post Has Been Viewed 2 Times