راولپنڈی(عباس ملک سے  )  مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما اور سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے ن لیگ کے ٹکٹ پر الیکشن نہ لڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔اڈیالہ روڈ پر کارنر میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیر داخلہ نے چپ کا روزہ توڑ دیا اور آزاد حیثیت میں انتخاب لڑنے کا اعلان کر دیا، ان کا کہنا تھا کہ پارٹی نے سیاسی یتیموں کو ٹکٹ دے دیے ہیں، میں آزاد الیکشن لڑوں گا اس لیے اب زیادہ محنت کی ضرورت ہے۔چودھری نثار علی خان نے اپنی پارٹی کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اگر پی ٹی آئی میں دس خامیاں ہیں تو ن لیگ میں 100 سے بھی زائد خامیاں موجود ہیں۔انہوں نے اپنے دیرینہ سیاسی رفیق اور پارٹی قائد نواز شریف کو بھی آڑے ہاتھوں لیا اور کہا کہ عورت راج کے مخالف نے آج اپنی بیٹی پارٹی پر مسلط کر دی ہے، انہوں نے کہا کہ میں نے منہ کھولا تو یہ شریف کہیں منہ دکھانے کے قابل نہیں رہیں گے لیکن 34 سال کی رفاقت کا خیال آجاتا ہے۔اس موقع پر کارکنوں نے چودھری نثار علی خان سے پی ٹی آئی میں شمولیت سے متعلق استفسار کیا تو انہوں نے جواب دیا کہ آپ الیکشن پر توجہ دیں، بہتر فیصلہ کروں گا۔چوہدری نثارعلی خان اور مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف کے اختلافات اب نئے نہیں رہے، ان کا آغاز گزشتہ سال نواز شریف کی بطور وزیراعظم سپریم کورٹ سے نااہلی سے پہلے ہی ہو گیا تھا تاہم وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ ان میں تیزی آتی گئی۔نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کے بعض بین السطور بیانات پر چوہدری نثار علی خان بے حد سیخ پا ہوئے اور اپنی ایک پریس کانفرنس میں یہاں تک کہہ دیا کہ میں یہاں لکھ کر لگا دوں گا کہ مریم نواز کا نام لینا منع ہے۔چوہدری نثار علی خان، نواز شریف کی نااہلی کے بعد شہباز شریف اور شاہد خاقان عباسی کی جانب سے بے حد اصرار کے باوجود نئی کابینہ کا حصہ نہیں بنے، بعد میں مسلم لیگ ن کے نئے صدر شہباز شریف نے اپنے بڑے بھائی اور چوہدری نثار کے اختلافات ختم کرانے کی مقدور بھر کوشش کی لیکن کامیاب نہیں ہو سکے۔آج کل لاہور میں قومی اور صوبائی اسمبلی کے امیدواروں کا فیصلہ کرنے کے لیے مسلم لیگ ن کے پارلیمانی بورڈ کا اجلاس جاری ہے، چوہدری نثار پہلے ہی کہہ چکے ہیں کہ وہ کسی کے ٹکٹ کے محتاج ہیں نہ ہی ٹکٹ کے لیے درخواست دیں گے، انہوں نے پارلیمانی بورڈ کے سامنے پیش ہونے سے بھی انکار کر دیا تھا۔ذرائع کے مطابق مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف چوہدری نثار علی خان کو بغیر درخواست ٹکٹ دینے کے حق میں ہیں لیکن نواز شریف کا اصرار ہے کہ جب تک چوہدری نثار درخواست نہیں دیں گے انہیں ٹکٹ جاری نہیں کیا جائے گا۔پیر کے روز چوہدری نثار علی خان نے خود یہ اعلان کر دیا ہے کہ وہ آزاد حیثیت میں انتخاب لڑیں گے۔

This Post Has Been Viewed 8 Times