شانگلہ الپوری (رضاشاہ سے) قومی وطن پارٹی ضلع شانگلہ کے چیرمین ڈاکٹر سجاد احمد خان نے اس بات پر سخت افسوس کا اظہار کرتے ہوے کہا کہ گزشتہ روز سانحہ بلوچستان کے کویلہ کان میں ایک بار پھر شانگلہ سے تعلق رکھنے والے 26مزدوروں کی لا شیں شانگلہ کے عوام کو تحفے میں ملیں جسکی جتنی بھی مزمت کی جاے تو کم ہے انھوں نے یہ باتیں گزشتہ روز شانگلہ پریس کلب الپوری میں ایک پور ہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوے بتای موصوف نے مزید وضاحت کرتے ہوے کہا کے شانگلہ کے سیاست پر بیس سالوں سے قابض پاکستان مسلم لیگ(ن کے نمایندوں جس میں وازیر اعظم کے مشیر ۔ایم ۔این۔اے ۔ایم ۔پی ۔اے کے علاوہ ضلعی ناظم بھی شامل ہے پورے ایک ہی خاندان نے شانگلہ کو ایر غمال بنایا ہوا اور شانگلہ کہ غریب عوام کیلے ان بیس سالہ دور قتدار میں کچھ نہیں کر سکے ہیں بغر اپنی ذاتی تجروی بھراور ذاتی فایدے کے علاوہ کوی ایسا ترقیاتی کامنہیں کیا ہے جس میں شانگلہ کے عام غریب ادمی کا فایدہ ہو انھوں نے غم ذادہ خاندانوں کے ساتھ اظہاریکجہتی کرتے ہوے حکومت وقت سے پور زور طور پر مطالبہ بھی کیا کے کول ما ین میں کام کرنے والوں کیلے ایک جامع پالسیے بناے اور شہداہ کے ورثاکو کم سے کم30لاکھ کا معاوضہ دیا جاے کیونکہ اس وقت کول ماین میں شہید ہونے والوں کو صرف اور صرف3لاکھ کا معاوضہ دیا جاتا ہے جو انتہای کم ہے پریس کانفرنس کہ دوران شاہ سعود ایڈوکیٹ ۔میاں محبت شاہ ایڈوکیٹ ۔عبدا لصبور ایڈوکیٹ ۔معمبر خان کے علاوہ قومی وطن پارٹی صوابی کے چیرمین معسود جبار نے خصوصی طور پر شرکت کیا انھوں نے خطاب کرتے ہوے کہا کہ شانگلہ کے غم میں برابر کا شریک ہوں 26 شہداکے علاوہ شانگلہ کی پسماندگی اور غربت کو دیکھر کر بہت دکھ ہوا انھوں نے کہا کہ پختونوں کے ساتھ ظلم و زیادتی ہو رہی پختونوں کے حقوق کے دعویدار موت سے ڈر تے ہیں اور موت سے ڈرنے والے عوام کے نمایندگی کے حقدار نہیں ہوتے ایم ایم اے ۔اے۔این ۔پی اور تبدیلی والوں نے اس صوبے کے ساتھ کیا کیا وازیر اعلی کا بیانشہداکے بارے میں قابل مذمت ہے اور میں اس کی بھر پور مذمت کرتا ہوں تبدیلی کے نعرہ لگانے والوں کے وازیر اعلی پرویز خٹک نے بی دلالی منصوبے میں 16ارب روپے کا کمیشن وصول کیا انھوں نے کہا کے پختونوں کو اپنے حقیقی قیادت پہچانی ہوگی پختوں دہرتی پر پہلا شہید حیات محمد خان شیر پاو تھا جس نے پختونوں کے حقوق کے لیے اپنے خون کا نذرانہ پیش کیا کرپشن کے خلاف کام کرنے والوں کے 36میں سے20ممبران اسمبلی کرپٹ نکلے اے۔این ۔پی کا دور ایزی لوڈ
میں گزر گیا اگر کرپشن نہیں ہولی ہوتھی تو مصوم شاہ نے 25کروڑ نیب کو کس مد میں ادا کیے اس ملک اور خاص کر اس صوبے کو کھبی اسلام کھبی قوم پرستی اور کھبی تبدیلی کے نام لوٹا ھیا اخیر پختونوں کے ساتھ ایسا کب تک ہوتا رہے گا ہمارے رہبر افتاب احمد خان شیر پاو کے قیادت میں ہی پختونوں کو ان کا حقیقی مقام ملے گاانشا اللہ

This Post Has Been Viewed 4 Times