لاہور(زرقاء منٹو سے )پنجاب کے اکثر شہروں میں علامہ خادم حسین رضوی کی اپیل پر  تحریک لبیک کے کارکنوں نے احتجاجی دھرنے دے رکھے ہیں جس کی وجہ سے شہروں کے داخلی اور خارجی راستے بند ہونے کی وجہ سے ہزاروں شہری شدید مشکلات کا شکار ہیں ،ایسے میں پاکستان علما کونسل کے چیئرمین علامہ طاہر محمود اشرفی نے میدان میں آتے ہوئے حکومت اور  علامہ خادم حسین رضوی سے ایسی اپیل کر دی ہے کہ جس کی ہر پاکستانی حمایت کرے گا ۔تفصیلات کے مطابق پاکستان علما کونسل کے چیئرمین علامہ حافظ طاہر محمود اشرفی نے علامہ خادم حسین رضوی اور تحریک لبیک کے دیگر قائدین سے اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ حکومت کے ساتھ تمام معاملات باہمی مذاکرات کے ذریعے حل کرے ،پاکستان علما کونسل یہ سمجھتی ہے کہ حکومت نے جو معاہدہ اسلام آباد میں کیا اس پر عمل ہونا چاہئے اور راجہ ظفر الحق کی رپورٹ منظر عام پر لائی جانی چاہئے  اور جو چیزیں عدالت سے منسلک ہیں ان کے بارے میں حکمت عملی طے کرنی چاہئے ۔انہوں نے کہا کہ تحریک لبیک کی قیادت کو عوام الناس کا احساس کرنا چاہئے ،راستے بند کرنے ،تشدد کا راستہ اختیار کرنے سے ملک میں انارکی پھیلے گی جو کسی بھی صورت مناسب نہیں ہے ۔علامہ طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ ہم حکومت اور تحریک لبیک یا رسول اللہ کی قیادت  سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ باہمی مشاورت سے معاملات کو مذاکرات کے ذریعے حل کریں ،کسی بھی صورت عوام الناس کے لئے راستوں کو بند رکھنے اور ملک میں انتشار اور فساد کی حمایت نہ کی جا سکتی ہے نہ کی جائے گی ،مسئلہ ختم نبوتﷺ پاکستان ہی نہیں عالم اسلام کا مسئلہ ہے ،جن مجرموں نے پاکستان کے آئین اور قانون میں موجود ختم نبوتﷺ  کے عقیدے کے حوالے سے شقوں میں ترمیم کی کوشش کی ہے ان کا محاسبہ کرنا بھی حکومت کی ذمہ داری ہے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت اپنی ذمہ داری پوری  کرے  اور تحریک لبیک عوام کے لئے مشکلات پیدا کرنے کی بجائے مذاکرات کے ذریعے معاملات حل کرے ۔

This Post Has Been Viewed 7 Times