. جیکب آباد(سومروبی بی سی) گزشتہ رات ایس ایچ او تھانہ میرپور کو خفیہ اطلاع ملی کے کچھ ڈکیت تھانہ میرپور کی حدود سے گزریں گے ایسے اطلاع ملتے ہی ایس ایچ او تھانہ میرپور سب انسپیکٹر نثار احمد نون بمعہ پولیس اسٹاف نے علاقے کا گشت شروع کیاگشت کے دوران جیسے ہی پولیس نائب جی لانڈھی کے قریب پہنچی تو تین موٹر سائکلز پہ سوار 5 نامعلوم مسلحہ افراد نے پولیس کودیکھتے ہی فائرنگ شروع کر دی پولیس نے اپنے دفاع میں جوابی فائرنگ کی جس کے نتیجے میں ملزمان اندھیرے کا فائدہ لیتے ہوئے فرار ہوگئے جبکہ 2 افراد جن کے ہاتھ بندھے ہوئے تھے اور آنکھوں پر کپڑا باندھا گیا تھا ان کو وہیں چھوڑ گئےدونوں افراد نے پولیس کو ابتدائی تفتیش کے دوران بتایا ہے کہ ان کے نام بابر بھٹی اور شاھمور برڑو ہے اور وہ میرپور کے رہنے والےہیں بابر بھٹی کی دوستی ایک لڑکی سے موبائیل فون کے ذریئے ہوئی تعلقات بڑھنے پر لڑکی نے ملاقات کے لئے اسے بلایا تو مورخہ 5 فیبروری کو بابر بھٹی اور شاھمور برڑو اپنے گھر سے ملاقات کے لئے نکلےاور جب ضلع شکارپور کی حدود میں زرخیل روڈ میاں جو گوٹھ پہنچے تو انہیں اغوا کر لیا گیاتب انہیں اندازہ ہو گیا کہ ان سے دوستی رکھنے والی لڑکی اصل میں اغوا کاروں کا حصہ تھی اور انہیں چکمہ دے کر اغوا کیا گیا ہےاغوا ہونے کے بعد انہیں مختلف علاقوں میں چھپایا جاتا تھااور آج اغوا کار ان مغویوں کو بلوچستان لے کر جا رہے تھے کےاچانک پولیس آگئی جس کے نتیجے میں مغویوں کی رہائی عمل میں آئی تھانہ میرپور میں 5 نامعلوم افراد کے خلاف پولیس مقابلے کا کیس داخل کر دیا گیا ہے

This Post Has Been Viewed 7 Times