ڈیرہ اسماعیل خان (امان اللہ بلوچ سے) ایمرجنسی آپریشن سینٹر (ای اوسی ) فاٹا کی طرف سے جاری رپورٹ کے مطابق سال 2018 کی دوسری انسداد پولیو مہم فاٹا (ایف آر ڈیرہ اسماعیل خان ) میں آج 12فروری2018 سے ایجنسی سرجنز، پولیٹکل انتظامیہ، کمشنرز اور قانون نافذ کرنیوالے اداروں کی نگرانی اور سرپرستی میں شروع کی جا رہی ہے۔ تین روزہ انسداد پولیو مہم 12 فروری 2018 سے 14 فروری 2018 تک جاری رہے گی، جس کے بعد رہ جانے والے بچوں کو پولیو قطرے پلوانے اور سرویلنس کا کام جاری رکھا جائے گا۔مہم کے دوران 5 سال سے کم عمر کے کل 1005774 بچوں کو4368 ٹیموں کی مدد سے پولیو قطرے پلوائے جائیں گے، جسمیں 3987 موبائل ٹیمیں، 276 فکسڈ ٹیمیں اور105 ٹرانزٹ ٹیمیں شامل ہیں۔ کوآرڈینیٹر ایمرجنسی آپریشن سینٹر(ای او سی) فاٹا محمد زبیر خان نے رہ جانے والے اور پولیو حساس علاقوں سے آنے جانے والے (دوران سفر) بچوں کو پولیو قطرے پلوانے پر ذور دیا۔ انہوں نے کہا کہ ایمرجنسی آپریشن سینٹر(ای او سی) فاٹا ٹیم نے انسداد پولیو مہموں کے معیار کو بہتر بنانے میں فاٹا ٹیم نے خاطر خواہ کامیابی حاصل کی اورپولیوکارکنان نے نہ صرف 2017 میں فاٹا کو پولیو سے پاک رکھا بلکہ گزشتہ اٹھارہ (18) مہینوں سے فاٹا کی صفر پولیو کیس کی حیثیت کو برقرار رکھنے کو ممکن بنایا۔ محمد زبیر خان نے کہا اب ہماری ترجیحات فاٹا کو پولیو سے پاک کرنا اور پولیو خاتمے کا حصول ہونا چاہیے۔ پچھلے اٹھارہ مہینوں سے فاٹا میں کوئی پولیو کیس رپورٹ نہیں ہوا۔ فاٹا میں آخری پولیوکیس 27 جولائی، 2016 کو سامنے آیا تھا، جس کے بعد سے اب تک کوئی پولیو کیس سامنے نہیں آیا۔ سال 2017 کے دوران فاٹا میں کوئی پولیو کیس رپورٹ نہیں ہوا جبکہ موجودہ سال بھی اب تک فاٹا میں کوئی پولیو کیس سامنے نہیں آیا۔

This Post Has Been Viewed 1 Times