ڈیرہ اسماعیل خان (امان اللہ بلوچ )انسپکٹر جنرل پولیس خیبرپختونخوا صلاح الدین خان کی جانب سے پولیس میں تبادلوں اور تقرریوں کے احکامات جاری ، ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ڈیرہ راجہ عبدالصبور خان کو سی پی او پشاور جبکہ ان کی جگہ زاہد اللہ خان کو ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ڈیرہ تعینات کردیاگیا ۔انسپکٹر جنرل پولیس خیبر پختونخوا کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ڈیر ہ راجہ عبدالصبور خان کو کیپیٹل پولیس آفیسر پشاور جبکہ ان کی جگہ زاہد اللہ خان کو ڈائریکٹر پبلک ریلیشن خیبر پختونخوا سے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ڈیرہ اسماعیل خان اور ڈی ایس پی سی ٹی ڈی خیبر پختونخوا کو ڈی ایس پی دفتر ڈائریکٹر پبلک ریلیشن خیبر پختونخوا تعینات کردیاگیاہے۔ڈسٹرکٹ پولیس آفیسرراجہ عبدالصبور خان نے اپنی تعیناتی کے دوران ڈیرہ اسماعیل خان میں بہترین خدمات سرانجام دیں ۔انہوںنے تھانہ میں پولیس کلچر کے خاتمہ میں اپنا بہترین کردار ادا کیا ۔ان کی کاوشوں کے ثمرات پولیس اہلکاروں کے رویوں میں تبدیلی کی صورت میں نظر آیا اور انہیں خدمت میں عظمت کے وژن پرعمل پیرا کرایا۔انہوں نے مختلف مقامات پر کھلی کچہریوں کا انعقاد کرکے عوامی مسائل ان کی دہلیز پر حل کرائے ۔تمام پولیس تھانوں کے محرروں کو حکم دیا کہ وہ پولیس سٹیشن آنے والے لوگوں کے ساتھ خوش اسلوبی کے ساتھ پیش آئیں اور تھانہ آنے والے لوگوں کا خصوصی خیال رکھیں۔ تھانوں کو فلاحی اور اصلاحی مراکزمیں تبدیل کرنا ان کا وژن رہا جس سے پولیس پر عوام کا اعتماد بحال ہوا۔تاہم بدقسمتی سے ان کی تعیناتی کے دوران ڈیرہ شہر میں دہشت گردی اور ٹارگٹ کلنگ کا سلسلہ بھی بدستورجاری رہا جس میں اہل تشیع اور اہل سنت افراد کے علاوہ پولیس اہلکاروں کی ٹارگٹ کلنگ کی گئی ۔ان واقعات میں اکثر ملزمان کو گرفتار کیاگیا لیکن پولیس کی ناقص تفتیش کے باعث ملزمان عدالت سے ضمانت پر یا مقدمات سے بعدم ثبوت رہائی پانے میں کامیاب ہوتے رہے ۔شیخ یوسف اڈہ پر فائرنگ کے واقعہ کے بعد متاثرہ گروپ کی جانب سے قانون کو ہاتھ میں لے کر اپنے مخالف گروپ کے گھرکا جلائو گھیرائوکرنا اور ان کی املاک کا نقصان پہچانے میں پولیس کی واضح ناکامی سامنے آئی ۔

This Post Has Been Viewed 5 Times