’’ظلم پھر ظلم ہے ‘‘
ظلم پھر ظلم ہے بڑھتا ہے تو مٹ جاتا ہے۔ تاریخ انسانیت گواہ ہے کہ روز اول سے ظالم اور مظلوم آپس میں نبردآزماہیں ۔ آدم کی تخلیق کے وقت جب اللہ کا حکم ہوا کہ آدم کو سجدہ کرو۔ تو سب فرشتے سجدے میں گرِ گئے ۔ سوائے شیطان کے اس طرح پہلا ظالم شیطان ہوا ۔ جس نے نافرمانی کی اور ظالم و کافر ہوگیا۔ اسی وقت حکم ہوا ہے کہ ’’اے شیطان آج سے ہم نے دو راستے بنا دیے ۔ایک رستہ مجھ خداکا (امن ، محبت ، اخلاق و نیکی ) اور دوسرا (ظلم، تباہی، شدت پسندی اوربد امنی) کا رستہ جو تم شیطان کا رستہ۔ میرے بندے میرے رستے پر چلیں گیااور جو بہک گئے وہ تیرے ہو گئے۔
اب یہ سسٹم چل نکلا بنی آدم کے بیٹے ہابیل اور قابیل میں شیطان نے اپنا اثر دکھایاتو بھائی نے بھائی کوقتل کر دیا۔زمین پر موت کی بھی نشاندہی ہو گئی۔ نفرت ،ظلم ، شدت پسندی کاآغاز ہو گیا۔تقسیم ہو گئی کہ رحمان کا گروہ اور شیطان کا گروہ۔یہ کام قیامت تک جاری رہے گا۔شیطان کے گروہ میں نمرود،شدّاد،فرعون،یزید،میر جعفر اور میر صادق جیسے کردار انسا نیت کی تا ریخ میں موجود ہیں، اسی طرح رحمان کا لشکر انبیاء،پنجتن پاک، اولیا ئے کرام اور بزرگانِ دین سے بھرا ہوا ہے۔
ظلم کیا ہے؟ ظلم میرے نزدیک یہ ہے کہ آپ اپنی طا قت اور اختیارات کا ناجائز استعمال کریں۔آ پ کسی بھی جگہ ہیں یا کسی بھی مقام پر ہیں اگر تو آپ جائزطریقے سے کام کر رہے ہیں تو آپ رحمان کے لشکر سے ہیں، اور اگر کہیں بھی آپہ نے اپنے اختیا رات کا ناجائز استعمال کیا تو آ پ ظالموں میں سے ہو گئے۔اللہ ہر ظلم سے بچائے، کیونکہ آج ظالم مختلف روپ دھارے مظلوموں پر ظلم کر رہے ہیں۔اللہ تعالیٰ نے قرآن پاک میں ظالموں پر لعنت کی ہے۔
زینب قتل کیس کو ہی لیں یا ماڈل ٹاؤ ن کے4 1 شہداء کو، دہشت گردی میں شہید بے گناہ شہریوں کو یا فوج کے جوانوں اور افسروں کو ، زینب اور اس جیسی بے شمار کلیوں کو مسل دیا گیا۔ نوجوان میڈیکل کی طالبہ کو رشتہ نہ دینے پر قتل کر دیا گیا۔یہ سب کیا ہے، یہ سب کون لوگ ہیں۔یہ سب ظالم لوگ ہیں جنہوں نے یہ سب کیا۔ یہ چوری، ڈاکے ، زنا، دہشت گردی، قتل و غارت گری، اقربا پروری، رشوت ستانی، کرپشن سب ظلم ہے اور اِن میں ملوّث سب ظالم ہیں۔جب جب ظلم ہوتا رہے گا،فرعون و شدّاد اور یزید جیسے لوگ ظلم کرتے رہیں گے اللہ موسٰےؑ اور امام حسین ؑ جیسے لوگوں کو پیدا فرماتا رہے گا۔اب ظلم کی انتہا ہو چکی ہے چار سوُ ظلم کی آندھی چل پری ہے۔اللہ سے دعا ہے کہ وہ جلد از جلد اِمامِ زمانہ جناب مہدیؑ کا ظہور فرمائے تا کہ وہ ہر ظلم و بربریت کا خاتمہ فرمائیں اور وقت کے یزیدوں کو کیفرِکردار تک پہنچائیں۔

This Post Has Been Viewed 2 Times