ڈیرہ اسماعیل خان (امان اللہ بلوچ سے ) پولیس لائن ڈیرہ میں پولیس کی نشانہ بازی میں بے تحاشا فائرنگ نے قریبی آبادی کے لوگوں کی قیمتی زندگیوں کو خطرہ میں ڈال دیا ،پولیس کی فائرنگ سے ایک شخص ماتھے پر خول لگنے سے شدید زخمی ہوگیا،گولیوں کی شدید تر تراہٹ سے لوگوں کا سکون غارت ،لوگ گھر کے اندر اپنے کمروں میں محصور ہونے پر مجبو رہوگئے ،اہلیان علاقہ کا شدید احتجاج ،آرپی او اور ڈی پی او ڈیرہ سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ ۔تفصیلات کے مطابق پولیس لائن ڈیرہ کے اندر پولیس کی جانب سے پولیس اہلکاروں کی تربیت کے لئے فائرنگ رینج بنایا گیا ہے جہاں پر زیر تربیت پولیس اہلکاروں کی کئی روز سے فائرنگ کی مشق جاری ہے۔پولیس کی نشانہ بازی کی اس مشق نے قریبی آبادی بستی ترین ،بستی نادعلی شاہ اور بستی استرانہ کے لوگوں کی زندگیوں کو شدید خطرہ میں ڈال دیا ہے اور بے تحاشا فائرنگ کے نتیجے میں گولیوں کے خالی خول لوگوں کے گھر وں میں جاگرتے ہیں جس کے نتیجے میں گزشتہ روز اپنے گھر کے اندر موجود سراج مسیح ماتھے پر خالی خو ل لگنے کے باعث شدید زخمی ہوگیا جسے فوری طور پر ہسپتال منتقل کیاگیا ۔اہلیان علاقہ کا کہنا ہے تمام دن گولیوں کی ترتراہٹ اور گھن گرچ سے ان کا سکون غارت ہوچکا ہے جس سے مریض اور بچے شدید متاثرہ ہورہے ہیں ۔ لوگ گھر کے اندر کمروں میں محصور ہوکر رہ گئے ہیں اور ان کا باہر نکلنا محال ہوچکا ہے جس سے ان کی گھروں زندگی شدید متاثرہوکر رہ گئی ہے۔بچوں اور خواتین سمیت دیگر افراد کی زندگیوں کو شدید خطرہ لاحق ہوچکا ہے۔ان کا کہاتھا کہ اس ضمن میں تھانہ کینٹ کو شکایت کی گئی لیکن تاحال کوئی شنوائی نہیں ہوئی ۔اگرفائرنگ کا یہ سلسلہ اسی طرح جاری رہا تو کسی بڑے جانی نقصان کا بھی سبب بن سکتا ہے۔انہوں نے آر پی او ڈیرہ اور ڈی پی او ڈیرہ سے مطالبہ کیا کہ پولیس کی نشانہ بازی کے لئے آبادی کے باہر کوئی جگہ مختص کی جائے اگر یہ ممکن نہ ہو تو یہاں پر ضروری حفاظتی انتظامات کو مکمل کرکے قیمتی انسانی زندگیوں کو دائو پر لگنے سے بچایا جائے ۔

This Post Has Been Viewed 3 Times