ڈیرہ بگٹی(بیوروچیف)سیدمحمدبگٹی کے والدہ نے مقامی میڈیاکے نمائندوں سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ ان کا بائیس سالہ بیٹے کے دونوں گردے فیل ہیں گذشتہ چارسالوں سے کراچی کوئٹہ اورسکہرکے ڈاکٹروں سے علاج کرارہاہوں ہردوسرے دن ڈیلسزکراناہوتاہے شوگرکامریض بھی ہے اورفالج کابھی ایک اٹیک ہواہے انہوں نے کہاکہ ڈاکٹروں کے مطابق ان کاعلاج ممکن ہے لیکن پیسے زیادہ لگ رہے ہیں میں غریب بیوہ ہوں میراشوہربارہ سال پہلے فوت ہوچکے ہیں میرے ساتھ اتنے پیسے نہیں ہیں کہ میں اپنے بیٹے کا علاج کراسکوں انہوں نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کو بتاتے ہوئے کہا کہ ان سے پہلے میں نے ضلعی انتظامیہ اور سیاسی رہنماؤں قبائلی رہنماؤں اور شہریوں نے میرے مدد کی ان پیسوں سے میں نے اپنے پیارے بیٹے کی علاج کروایاکراچی میں ڈاکٹرادیب رضوی سے چیک اپ کروایاڈاکٹروں کاکہناہے کہ میرے بیٹے سیدمحمدکے دونوں گردے مکمل طورپرفیل ہیں اب گردے تبدیل کیئے جائیں میں اپنی ایک گردہ دینے کوتیارہوں لیکن آپریشن کے اخراجات میرے پاس نہیں ہیں مزید علاج کے لئے ڈاکٹر زیادہ پیسے مانگ رہے ہیں لیکن میرے پاس کچھ نہیں ہے کہ میں اپنے بیٹے کی علاج کرسکوں انہوں نے کہا کہ میں یہ بھی چاہتی ہوں کہ میرا بیٹاجوکہ مدرسہ میں تعلیم حاصل کررہاتھااسکومکمل کرلے لیکن میرے مالی حالات ٹھیک نہیں ہیں انہوں نے مخیر حضرات ایف سی کمانڈنٹ ڈیرہ بگٹی وڈپٹی کمشنر جاویدنبی کہوسہ قبائلی رہنماؤں سیاسی رہنماؤں وزیراعلیٰ بلوچستان اور صوبائی وزیرداخلہ بلوچستان میرسرفرازخان بگٹی اوردیگر ضلعی انتظامیہ کے آفیسروں سے اپیل کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ ان کی مالی مدد کریں تاکہ میں اپنے بیٹے کی علاج کرسکوں

This Post Has Been Viewed 23 Times