اسلام آباد(بی بی سی)نئے وفاقی بجٹ میں پرانے اور نئے پنشنروں کی پنشن میں20فیصد اضافہ کئے جانے کا امکان ہے، جبکہ سول و فوجی ملازمین کی تنخواہوں میں15فیصد کے لگ بھگ اضافے کی تجویز ہے۔تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار26مئی کو وفاقی بجٹ تقریر میں نان فائیلرز آف ٹیکس ریٹرن پر ود ہو لڈ نگ ٹیکس ریٹ بڑھانے کا اعلان کریں گے ۔بینکوں کی ٹرانزکشن سمیت مختلف کیٹیگریوں پر نان فائیلرز سے ودہولڈنگ ٹیکس مختلف شرحوں سے لیا جارہا ہے نان فائیلرز جو سالانہ ٹیکس گوشوارے فائل نہیں کرتے پر ودہولڈنگ ٹیکس کی شرح بڑھانے کی تجویز کی منظوری وزیر خزانہ وزیراعظم پاکستان سے لیں گے ۔یہ بجٹ تجویز ہوگی قومی اسمبلی نے فنانس بل2017میں شامل کی گئی اس تجویز کی منظوری دی تو ایف بی آر ریونیو میں20سے50ارب روپے کا اضافہ ہوجانے کا امکان ہے۔اس کے نتیجے میں سالانہ آمدن ٹیکس گوشوارے جمع کرانے والوں کی تعداد 15 لاکھ کے لگ بھگ ہوجائے گی اور ملکی معیشت دستاویزی کرنے کا حکومتی پلان کامیابی سے آگے بڑھے گا۔پاکستان مسلم لیگ(ق) نے2006اور 2007میں پرانے پنشنروں کی پنشن میں20فیصد اور نئے پنشنروں کی پنشن میں15فیصد اضافہ کیا ۔زرداری دور میں ہر سال پرانے پنشنروں کی پنشن میں 20فیصد اور نئے پنشنروں کی پنشن میں اوسطا 15فیصد سالانہ اضافہ کیا گیا لیکن مسلم لیگ نے 2013اور 2014میں نئے پرانے پنشنروں کی پنشن میں دس دس فیصد اضافہ کیا تھا۔

This Post Has Been Viewed 122 Times