افغان سرحد:(بی بی سی) افغان سرحد بند ہونے کے بعد افغان ٹرانزٹ کے لیے افغان امپورٹرز نے اگلے ماہ سے پاکستانی بندرگاہوں کے بجائے ایرانی بندرگاہ بندر عباس سے تجارت کا فیصلہ کر لیا۔ رہنما پاک افغان چیمبر ، یعقوب شیخ کے مطابق افغان امپورٹرز نے راہ داری بندر عباس منتقل کر دی ہے ، صرف پہلے سے منگوایا گیا مال پاکستانی بندرگاہ آ رہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ افغان ٹرانزٹ کے ماہانہ 6500 کنٹینرز پاکستان کے راستے افغانستان جاتے ہیں لیکن اپریل سے یہ پاکستان نہیں آئیں گے۔انہوں نے کہا کہ کراچی افغانستان ایکسپورٹ کے لیےپاکستان کی سالانہ دو ارب ڈالر ایکسپورٹ بھی رک گئی جبکہ سیمنٹ ، ٹیکسٹائل اور کھانے پینے کی اشیاء کی ایکسپورٹ کے 2500 کنٹینرز پھنس گئے۔انہوں نے مزید کہا کہ پاکستانی بندرگاہوں اور مختلف علاقوں میں افغان ٹرانزٹ کےلیے پھنسے کنٹینرز کی تعداد 2000 ہو گئی۔

This Post Has Been Viewed 49 Times